مری جان آپ کے صدقے مرے ماں باپ فدا

Posted in آفاق نما

 

مری جان آپ کے صدقے مرے ماں باپ فدا
دل وجان حاضر دربار ہیں اے دینِ پناہ


میں خطا کار سراپا ہوں، گرفتارِ بلا
ہمہ تن آپؐ کرم ہیں مرا قرآن گواہ!


مرے مولا مجھے قرآن نے بتلایا ہے
انھم اذظلموا انفسھم جا ؤک


آپ کی بارگاۂ اقدس کے لائق میں کہاں
بارگاہ آپ کی اور یہ سگِ دنیا توبہ


یا نبی میری بدل ڈالئے دل کی دنیا
ہو مرے قلبِ حزیں کو بھی عطا دردِ ولہٰ


آرزو ہے یہی آفاق کی اے جانِ مراد
آپ کے عشق و محبت ہی میں ہوجائے فنا