غریبم یارسول اللہ

Posted in عہد نامہ

غریبم یارسول اللہ 


کہیںسرمایہ داری نے مجھے بیچا ہے جی بھر کے
کہیں جاگیرداری نے مجھے لوٹا ہے جی بھر کے
ملوکیت نے نوچے ہیں کہیںپر خال و خد میرے
صلیبوں سے نصاریٰ نے کہیں مارا ہے جی بھر کے
غریبم یارسول اللہ، غریبم یارسول اللہ
یہودیت کے پاﺅں ہیںمسلسل جسم پرمیرے
مرے مولا جہاں بھر میں ہیںبکھرے دل ، جگر میرے
پڑا ہوں نیل کے ساحل سے لے کرکاشغر تک میں
کئی حصوں میں بانٹا ہے بدن کوکاٹ کر میرے
غریبم یارسول اللہ، غریبم یارسول اللہ