میں نے کیا دیکھنا تھا ویسے بھی

Posted in میں عشق میں ہوں

 

میں نے کیا دیکھنا تھا ویسے بھی

میں وہاں سو رہا تھا ویسے بھی

 

اس کی آنکھیں بدل رہی تھیں ذرا

اور میں بے وفا تھا ویسے بھی

 

اس نے مجھ کو پڑھانا چھوڑ دیا

میں بڑا ہو گیا تھا ویسے بھی

 

کچھ مزاج آشنا نہ تھی دنیا

کچھ تعلق نیا تھا ویسے بھی

 

کچھ ضروری نہیں تھے درد و الم

میں اسے پوجتا تھا ویسے بھی

 

اس نے چاہا نہیں مجھے منصور

میں کسی اور کا تھا ویسے بھی