وقت کا بھیڑیا

Posted in تین کواڑ


وقت کا بھیڑیا


مجھے قسم ہے کھجور کی ٹوٹی ہوئی شاخ کی طرح افق کی گود میں گرتے ہوئے چا ند کی۔۔
مجھے قسم ہے شام کے کشکول میں کھنکھناتے سکے کی طرح گرتے آفتاب کی۔۔
مجھے قسم ہے صحن کی کچی دیوار سے اونچے لگائے گئے
اس چالیس والٹ کے بلب کی
جس سے ہمسائے کا بے چراغ گھربھی کچھ کچھ روشن ہے۔۔۔
وقت روشنی ٹپکاتے ہوئے قلم سے
اپنے روشن تر خوابوں کو
روشن ترین لمحوں میں بدلنے کے لئے مصروفِ عمل ہے۔
اس کے سینے میں دل دھڑکتا ہے
مگر دل تو بھیڑیے کے سینے میں بھی د ھڑکتا ہے