گوئن ٹانا موبے

Posted in تین کواڑ

گوئن ٹانا موبے


قیدیوں کے ساتھ غیر انسانی سلوک کی روایت تو بہت قدیم ہے۔
قید خانوں کی داستان میں سب سے بھیانک
’’کالے پانی کی سزا‘‘یعنی ایڈیمان کے جزیرہ میں قید کی روایت ہے
شایدگوئن ٹانا موبے اسی کا تسلسل ہے۔
وہ وقت دور نہیں گوئن ٹانا موبے کو بھی حنوط کر دیا ہے
1945 میں جب کالے پانی کی جیل کی عمارت
گرانے کرنے کے احکامات جاری کئے گئے تھے
تو آزادی کے متوالوں نے کہا
نہیں ظلم کی یہ علامت گرائی نہیں جا سکتی۔
یہ تو آنے والی نسلوں کو اس بات کی خبر دے گی
کہ ظلم کی کس تاریک رات سے گزر کر
ہم یہاں تک آئے ہیں۔
مگر ظلم کی رات کہاں گزرتی ہے۔
ستم کی آہنی زنجیریں اسی طرح پاؤں میں شور کر رہی ہیں۔
ایک کالا پانی ختم ہوا ہے تو کئی کالے پانی وجود میں آگئے ہیں۔۔۔۔۔
’’ کالا پانی‘‘صرف باہر نہیں۔۔
چمکتے دمکتے انسانی جسموں کے اندر بھی موجود ہے۔
یہ ظلم کے اس مزاج کا نام ہے
جو صرف انسانی خون سے رغبت رکھتا ہے
یہ کالا پانی صدیوں سے اپنے اقتداراور اپنی قوت کے استحکام کے لئے
موت تقسیم کرتا چلا آرہا ہے۔
اور آتی نسلوں کے لئے اپنی پچھلی شکلیں حنوط کرتا چلا آرہا ہے